News4

اسرائیل کے حملوں کے باوجود فلسطینی عوام کے حوصلے پست نہیں ہوئے

عالمی طاقتوں سے مداخلت کی اپیل، سی پی آئی کا جلسہ اظہار یگانگت، فلسطینی سفیر عدنان محمد اور ڈی راجہ کا خطاب
حیدرآباد ۔ 5 ۔ فروری(سیاست نیوز) فلسطینی عوام سے اظہار یگانگت کے لئے سی پی آئی کی جانب سے حیدرآباد میں جلسہ عام منعقد کیا گیا۔ مقررین نے غزہ پر اسرائیلی حملوں کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ نہتے فلسطینیوں پر اسرائیل نے بمباری اور زمینی راستہ سے حملہ کرتے ہوئے علاقہ پر ناجائز قبضہ کی منصوبہ بندی کی ہے۔ اسرائیلی حملوں میں ہزاروں فلسطینیوں کی موت کے باوجود فلسطینی عوام کے حوصلے بلند ہیں۔ ہندوستان میں فلسطین کے سفیر عدنان محمد جابر ابوالحیجا، سی پی آئی کے قومی جنرل سکریٹری ڈی راجہ ، قومی سکریٹریز سید عزیز پاشاہ ، ڈاکٹر کے نارائنا ، پلبسین گپتا اور دیگر جہد کاروں نے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے فلسطینی عوام کی جدوجہد کی مکمل تائید کی۔ مقررین نے کہا کہ عالمی طاقتوں کو جنگ بندی کیلئے مداخلت کرنی چاہئے ۔ فلسطین کے سفیر عدنان محمد جابر نے کہا کہ فلسطینی عوام حملوں کے باوجود علاقہ کا تخلیہ کرنے کیلئے تیار نہیں ہے۔ وہ اپنی سر زمین پر ہی آخری سانس لیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ 7 اکتوبر کو اسرائیل پر حماس کی کارروائی کو دہشت گردانہ کارروائی قرار دیا جارہا ہے جبکہ حماس نے اسرائیلی حملوں کے جواب میں یہ کارروائی کی تھی۔ فلسطین کے سفیر نے کہا کہ فلسطین کی تاریخ سے واقف افراد اچھی طرح جانتے ہیں کہ فلسطینی عوام نے کوئی دہشت گرد کارروائی نہیں کی۔ گزشتہ 75 برسوں سے اسرائیلی مظالم کا سلسلہ جاری ہے اور 10 لاکھ سے زائد افراد کو گرفتار کیا گیا ۔ مغربی کنارہ سے فلسطینیوں کے تخلیہ کی سازش کی جارہی ہے جبکہ فلسطینی عوام اپنی سرزمین چھوڑنے کیلئے تیار نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ غزہ میں 23 لاکھ افراد بستے ہیں ، ان میں سے 75 فیصد غربت کا شکار ہیں۔ حماس کی کارروائی سے قبل اسرائیل نے فلسطین کے 260 افراد کو شہید کردیا تھا۔ فلسطینی سفیر نے اسرائیلی مظالم کی تفصیلات پیش کیں اور کہا کہ ہندوستان میں ہمیشہ فلسطینی کاز کی تائید کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ 120 دنوں میں اسرائیلی حملوں میں 27000 افراد ہلاک ہوئے ہیں، ان میں سے 11000 معصوم بچے اور 8000 ضعیف العمر افراد شامل ہیں۔ 11000 سے زائد افراد کو اسرائیل نے قیدی بنالیا ہے ۔ اسرائیلی حملوں میں 122 صحافی ہلاک ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کی قرارداد کے تحت فلسطینیوں کو اپنے علاقہ میں قیام کا حق حاصل ہے۔ متاثرین کو اقوام متحدہ کی جانب سے امدادی سرگرمیوں کو روک دیا گیا۔ سی پی آئی کے قومی جنرل سکریٹری ڈی راجہ نے نریندر مودی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ اسرائیلی حملوں کو روکنے کیلئے ہندوستان نے اپنے اثر و رسوخ کا استعمال نہیں کیا۔ مرکزی حکومت امریکہ کے اشاروں پر کام کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سی پی آئی نے ہمیشہ سے فلسطینی کاز کی تائید کی ہے ۔ جلسہ عام میں فلسطینیوں کی حمایت اور اسرائیل کی مذمت کرتے ہوئے قرارداد منظور کی گئی ۔ اس موقع پر فلسطینی سفیر کو 50000 روپئے کی امدادی رقم حوالے کی گئی جو جلسہ میں شریک ایک اہل خیر شخص نے بطور عطیہ دی ہے ۔ قومی سکریٹری سید عزیز پاشاہ نے کہا کہ اسرائیلی مظالم کو روکنے کیلئے ہندوستان کو اہم رول ادا کرنا چاہئے ۔ 1

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *