اس حکومت کیساتھ کام کریں گے جس کو پاکستانی عوام نے منتخب کیا، امریکا

واشنگٹن : امریکا کا کہنا ہے کہ اس حکومت کیساتھ کام کریں گے جس کو پاکستانی عوام نے منتخب کیا تاہم دھاندلی کے دعوؤں پر مکمل تحقیقات دیکھنا چاہتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ترجمان امریکی محکمہ خارجہ میتھیوملر نے پریس بریفنگ کے دوران کہا کہ اس حکومت کیساتھ کام کریں گے، جسے پاکستانی عوام نے منتخب کیا، دھاندلی کے دعوؤں پرمکمل تحقیقات دیکھناچاہتےہیں، دھاندلی کے دعوؤں کی مکمل چھان بین کی ضرورت ہے۔

میتھیو ملر کا کہنا تھا کہ واضح طور پر ایک مسابقتی الیکشن تھا، لوگوں نے پسند کے مطابق ووٹ دیا، بےضابطگیوں کی تحقیقات دیکھنا چاہتے ہیں،جمہوری عمل کا احترام بھی کرتے ہیں۔

امریکی ترجمان نے کہا کہ حکومت بننے کے بعد اس کے ساتھ کام کرنے کو تیار ہیں، چاہتے ہیں دنیا میں کہیں بھی اجتماع کی آزادی کا احترام کیا جائے، آزادانہ تحقیقات کیلئے پاکستان قانونی نظام ہی پہلا مناسب قدم ہوگا، تحقیقات کیلئے مزید اقدامات کی ضرورت ہو تو غور کیا جا سکتا ہے۔

امریکا نے عوامی اور نجی طور پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ای یو، برطانیہ و دیگر ممالک نے بھی خدشات کا اظہار پاکستانی حکومت سے کیا، پاکستانی حکومت سے کہا ہے کہ وہ انتخابات کے نتائج کا احترام کرے۔

میتھیو ملر نے زور دیتے ہوئے کہا کہ قانون کی حکمرانی اور آئین ، آزادی صحافت،متحرک سول سوسائٹی کا احترام کیا جائے۔

ترجمان نے انتخابات سے متعلق تشدد، انٹرنیٹ اور فون سروس بندش کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ تشدد،انٹرنیٹ وفون سروسز بندش نےانتخابی عمل کو منفی طور پر متاثر کیا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ مداخلت ودھاندلی دعوے پر پاکستانی قانونی نظام کےتحت تحقیقات کی جائیں، ہم آنے والے دنوں میں اس عمل کی نگرانی کرتے رہیں گے۔

ترجمان امریکی محکمہ خارجہ نے پاکستانی قوم کو انتخابات میں حصہ لینے پر مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ الیکشن ورکرز،سول سوسائٹی، صحافی اور مبصرین نے انتخابی اداروں کا تحفظ کیا،

میتھیوملر کا کہنا تھا کہ پاکستانی حکام کوانتخابی نتائج کااحترام کرنے کا کہا ہے، قانون کی حکمرانی،آئین کااحترام،آزادمیڈیا،متحرک سوسائٹی دیکھناچاہتےہیں۔

انھوں نے مزید کہا کہ پاکستانی عوام جس کوبھی نمائندگی کےلیےمنتخب کرینگےساتھ مل کرکام کریں گے، دھوکا دہی اور دھاندلی کے تمام الزامات کی تحقیقات دیکھنا چاہتے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *