News4

اللہ رب العزت نے قوم و ملت کی خدمت کیلئے منتخب کیا ہے : جناب عامر علی خان

رکن تلنگانہ قانون ساز کونسل کی حیثیت سے انتخاب پر بارگاہ الہٰی میں شکر کی ادائیگی
حیدرآباد۔27جنوری(سیاست نیوز) جناب عامر علی خان نے انہیں تلنگانہ رکن قانون ساز کونسل بنائے جانے کے فیصلہ پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ وہ اللہ رب العزت کا شکر ادا کرتے ہیں کہ اللہ نے انہیں قوم و ملت کی خدمت کے لئے منتخب کیا ہے اور اس ذمہ داری کے ساتھ ان کی زندگی کے ایک نئے اور کٹھن سفر کا آغاز ہوا ہے ۔ انہوں نے عامۃ المسلمین سے خواہش کی کہ وہ ان کی زندگی کے اس مرحلہ میں بھی کامیابی کے لئے ان کے حق میں دعاء کریں تاکہ انہیں دی گئی ذمہ داریوں کے ساتھ وہ انصاف کرسکیں۔ جناب عامر علی خان نے بتایا کہ ان سے جب کانگریس اعلیٰ کمان نے ریاستی کابینہ میں مسلم چہرے اور نمائندگی کے سلسلہ میں تجاویز طلب کی تو انہوں نے چند نام دیئے تھے لیکن پارٹی ہائی کمان نے پارٹی سے تعلق رکھنے والے قائدین کے ناموں کا جائزہ لینے کے بعد انہیں قانون ساز کونسل کی رکنیت کی پیشکش کرتے ہوئے قوم و ملت کی خدمات کا مشورہ دیا۔ انہوں نے بتایا کہ جب انہیں یہ پیشکش کی گئی تو انہوں نے اس سے انکار نہیں کیا اور اسے قبول کرتے ہوئے عوامی زندگی میں نئے سفر کا آغاز کرنے کا فیصلہ کیا ۔ جناب عامر علی خان نے بتایا کہ اللہ تعالیٰ نے انہیں جو ذمہ داری دی ہے وہ انتہائی اہم ہے وہ اللہ کا شکر ادا کرنے کے علاوہ دعاء گو ہیں کہ اللہ انہیں اس عہدہ کی ذمہ داری کو پورا کرنے کی طاقت و قوت عطا ء کرے۔ نومنتخبہ رکن قانون ساز کونسل نے بتایا کہ وہ کانگریس اعلیٰ کمان‘ گورنر تلنگانہ ڈاکٹر تمیلی سائی سوندراراجن ‘ چیف منسٹر تلنگانہ اے ریونت ریڈی کے علاوہ ریاستی وزراء اور دیگر کانگریس قائدین کے بھی مشکور ہیں جنہوں نے اس نئے سفر کے آغاز میں ان کے شانہ بہ شانہ رہے۔ جناب عامر علی خان نے کہا کہ رکن قانون ساز کونسل کی حیثیت سے وہ ملت مظلوم کی نمائندگی اور تلنگانہ کے مسلمانوں کے ساتھ ساتھ دیگر تمام طبقات سے تعلق رکھنے والوں کے مسائل کے حل کے سلسلہ میں حکومت سے نمائندگی کو یقینی بناتے ہوئے ان کے مسائل کو حل کروانے میں کوئی کسر باقی نہیں رکھیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ ان کی ترجیحات تلنگانہ کے بے روزگار نوجوانوں کو روزگار سے مربوط کرنے کے علاوہ مسلمانوں کی معاشی و تعلیمی پسماندگی کو دور کرنے کے اقدامات ہوں گی ۔ اس کے علاوہ شہری ترقی و دیہی ترقی کے ساتھ ساتھ ملازمین سرکار کے مسائل کو حل کروانے کے معاملہ میں وہ کوشش کریں گے۔3

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *