امریکہ میں ای بُکس پر پبلشرس اور لائبریریوں کے درمیان تنازعہ

نیویارک : ڈیجیٹل مواد پر امریکہ میں پبلشرز اور لائبریریوں کے درمیان مفادات کے تصادم کے نتیجے میں ایک قانونی جنگ کا سلسلہ جاری ہے۔ امریکی ریاستیں ’معقول شرائط‘ پر ای کتابوں کی دستیابی کے لیے قانون سازی پر غور کر رہی ہیں۔ امریکہ میں پبلشرز کی جانب سے کاپی رائٹ کے تحت شروع کی گئی قانونی چارہ جوئی کی وجہ سے اب ڈیجیٹل لائبریریوں کو اپنے صارفین کو کتب کی آن لائن فراہمی میں رکاوٹوں کا سامنا ہے۔ الیکٹرانک کتابوں کے کئی فوائد ہیں، یہ نہ تو قارئین سے گم ہوتی ہیں اور نہ ہی ان کی ساخت کو عام کتابوں کی طرح وقت کے ساتھ نقصان پہنچتا ہے۔ تاہم امریکی لائبریریوں کے لیے پبلشرس کی جانب سے ای کتابوں کے لیے محدود اور مہنگے ڈیجیٹل لائسنس خریدنے کے معاہدہ تشویش کا باعث بن چکے ہیں۔ ایلیسن ماکارینا ایک لائبریرین اور ایڈوکیسی گروپ لائبریری فریڈم پراجیکٹ کی ڈائریکٹر ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ ہمیں ہر ایک ای بک کے چیک آؤٹ کے لیے ادائیگی کرنی پڑتی ہے، ہم ایک کتاب کی کتنی ڈیجیٹل کاپیاں ایک وقت میں مستعار دے سکتے ہیں اس پر بھی بڑی حدیں ہیں اور اس کے علاوہ مزید صوابدیدی مسائل بھی شامل ہیں۔ امریکہ میں واقع لائبریریوں کے لیے ای بکس، آڈیو بکس، موسیقی اور دیگر آن لائن سہولیات کوویڈ ۔ 19 کی عالمی وبا کے دوران لاک ڈاؤن میں انتہائی اہمیت اختیار کر گئی تھیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *