News4

اپوزیشن کو مٹانے کی اکائی بن گئی ہے ای ڈی، سی بی آئی:کھرگے ۔راہول

بی جے پی کی واشنگ مشین میں جو گیا وہ بچ گیا۔ جمہوریت کو آمریت سے بچانے بی جے پی کو شکست دینا ہوگا۔ اپوزیشن پارلیمنٹ سے سڑکوں تک لڑے گی

نئی دہلی: صدر کانگریس ملکارجن کھرگے ، سابق صدر راہول گاندھی اور پارٹی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے جھارکھنڈ کے وزیر اعلیٰ ہیمنت سورین کی انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹکے ذریعہ گرفتاری پر سخت رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ مودی حکومت ایجنسیوں کو وفاقی ڈھانچے کے نظام کو ختم کرنے اور اپوزیشن کو ختم کرنے کا کام دے دیا گیا۔کانگریس لیڈروں نے کہا کہ مودی حکومت مخالفین کو کمزور کرنے کے لیے ای ڈی، سی بی آئی، آئی ٹی اور دیگر ایجنسیوں کا استعمال کر رہی ہے ۔ یہ حکومت اپوزیشن سے خوفزدہ ہے ، اس لیے اپوزیشن کو ختم کرنے اور آئینی نظام کو تباہ کرنے کا کام ان تمام سرکاری اداروں کو دیا گیا ہے ۔ کھرگے نے کہا کہ جو بھی مودی جی کے ساتھ نہیں گیا وہ جیل جائے گا۔ جھارکھنڈ کے وزیر اعلیٰ ہیمنت سورین پر ای ڈی لگانا اور انہیں استعفیٰ دینے پر مجبور کرنا وفاقی ڈھانچے کی خلاف ورزی ہے ۔ پی ایم ایل اے التزامات کو سخت بنا کر اپوزیشن لیڈروں کو ڈرانا، دھمکانا بی جے پی کی ٹول کٹ کا حصہ ہے ۔انہوں نے کہاکہ سازش کے تحت ایک ایک کر کے اپوزیشن کی حکومتوں کو غیر مستحکم کر نے بی جے پی کا کام جاری ہے ۔ بی جے پی کی واشنگ مشین میں جو گیا وہ سفید ی کی طرح چمک کر صاف ہے ، جو نہیں گیا وہ داغدار ہے ، جمہوریت کو آمریت سے بچانا ہے تو بی جے پی کو شکست دینا ہوگی۔ ہم ڈرنے والے نہیں، پارلیمنٹ سے سڑکوں تک لڑتے رہیں گے ۔راہول نے کہا کہ ای ڈی، سی بی آئی، آئی ٹی وغیرہ اب سرکاری ایجنسیاں نہیں رہیں، اب یہ بی جے پی کی ‘اپوزیشن مٹاؤ سیل ’ بن چکی ہیں۔ خود بدعنوانی میں دھنسی ہوئی بی جے پی اقتدار کے جنون میں جمہوریت کو تباہ کرنے کی مہم چلا رہی ہے ۔پرینکا گاندھی نے کہاکہ اپوزیشن سے آزاد پارلیمنٹ، جمہوریت سے آزاد ہندوستان، سوالوں سے آزاد میڈیا اور ہم آہنگی سے آزاد عوام ۔ یہ بی جے پی حکومت کا ہدف ہے ۔ تمام ریاستوں میں ایک ایک کرکے حکومتیں گرائی جارہی ہیں۔ اپوزیشن لیڈروں کو تشدد کا نشانہ بنایا جارہا ہے ۔ بی جے پی میں شامل نہیں ہوں گے تو جیل جائیں گے ۔انہوں نے کہاکہ ہیمنت سورین جی کو ای ڈی لگا کر ہراساں کرنا اور انہیں استعفیٰ دینے پر مجبور کرنا اس مہم کا ایک حصہ ہے ۔ بی جے پی کو یہ وہم ہے کہ وہ 140 کروڑ لوگوں کی آواز کو کچل سکتی ہے ۔ عوام ہر ظلم کا جواب دیں گے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *