News4

بائیڈن امریکی فوجیوں پرحملے کا جواب دینے کیلئے پرعزم

ایران کا جوابی کارروائی کا انتباہ
واشنگٹن: صدر جو بائیڈن کی طرف سے اردن کے ایک فوجی اڈے پر تین امریکی فوجیوں کی ہلاکت کا تعلق تہران سے جوڑنے کے بعد ایران نے گزشتہ روز دھمکی دی کہ وہ اپنی سرزمین پر کسی بھی امریکی حملے کا فیصلہ کن جواب دے گا۔امریکہ نے اس جانب اشارہ کیا ہے کہ وہ اردون میں ایک امریکی فوجی تنصیب ٹاور 22 پر اتوار کو ہونے والے ڈرون حملے کے تناظر میں مشرق وسطیٰ میں جوابی حملوں کی تیاری کر رہا ہے۔ اس ڈورن حملے میں تین امریکی فوجی ہلاک جب کہ کم از کم 40 زخمی ہو گئے تھے۔امریکہ کی جانب سے کوئی بھی نیا حملہ خطے میں آگ کو مزید بھڑکا سکتا ہے جہاں غزہ کی پٹی میں اسرائیل اور حماس کے درمیان جاری جنگ سے پہلے ہی صورت حال ابتر شکل اختیار کر چکی ہے۔ایران پر ممکنہ امریکی حملے کے خلاف ایرانی دھمکی سب سے پہلے نیویارک میں اقوام متحدہ میں ایران کے سفیر امیر سعید ایرانی کی طرف سے سامنے آئی۔ ایران کی سرکاری نیوز ایجنسی ارنا کے مطابق ایرانی سفیر نے صحافیوں کو بریفنگ میں ایران کے ردعمل کے بارے میں بتایا۔انہوں نے صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ کسی بھی بہانے سے ایران کے مفادات اور شہریوں پر حملے کا اسلامی جمہوریہ فیصلہ کن جواب دے گی۔ایران کے سفیر امیر سعید ایرانی نے اس بات کی بھی تردید کی کہ پچھلے چند روز کے درمیان امریکہ اور ایران کے درمیان براہ راست یا کسی ثالث کے ذریعے پیغام کا تبادلہ ہوا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *