News4

بنگال میں ’بھارت جوڑو نیائے یاترا‘ دوبارہ شروع

راہول گاندھی کی مرکزی حکومت پر شدید تنقید‘نفرت پھیلانے کا الزام
سلی گوڑی: کانگریس قائدراہول گاندھی نے اتوار کو شمالی مغربی بنگال کے جلپائی گوڑی ضلع سے اپنی بھارت جوڑو نیائے یاترا دوبارہ شروع کر دی۔ مغربی بنگال کے سلی گوڑی سے بھارت جوڑو نیا یاترا شروع کرنے کے بعد راہول گاندھی نے ایک جلسہ عام سے خطاب کیا۔اس موقع پر انہوں کہا کہ مرکزی حکومت نفرت اور تشدد کو ہوا دے رہی ہے۔ راہول گاندھی نے کہا کہ بی جے پی کی قیادت والی مرکزی حکومت ملک بھر میں نفرت اور تشدد پھیلا کر غریبوں اور نوجوانوں کے مفادات کو نظر انداز کر کے بڑے کارپوریٹ گھرانوں کیلئے کام کر رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ مسلح افواج کیلئے قلیل مدتی بھرتی کی اسکیم اگنی ویر شروع کر کے مرکزی حکومت نے ان نوجوانوں کا مذاق اڑایا ہے جو فوج میں شامل ہونا چاہتے ہیں۔ ملک بھر میں نفرت اور تشدد پھیلایا جا رہا ہے۔ اس سے کوئی فائدہ نہیں ہوگا۔ ہمیں نفرت پھیلانے کے بجائے محبت پھیلانے اور اپنے نوجوانوں کو انصاف فراہم کرنے کیلئے کام کرنا ہوگا۔انہوں نے مزید کہا کہ مرکزی حکومت صرف بڑے کارپوریٹ گھرانوں کے لیے کام کر رہی ہے، غریبوں اور نوجوانوں کے لیے نہیں۔ مغربی بنگال میں ان کے استقبال پر اظہار تشکر کرتے ہوئے گاندھی نے کہا کہ بنگال ان کے پاس ایک خاص مقام رکھتا ہے۔ اس نے جدوجہد آزادی کے دوران نظریاتی جنگ کی قیادت کی۔ یہ بنگال اور بنگالیوں کا فرض ہے کہ وہ نفرت کے خلاف جنگ کی رہنمائی کریں اور موجودہ حالات میں ملک کو یکجا رکھنے میں مدد کریں۔خیال رہے کہ راہول گاندھی نے 25 جنوری کو ریاست کے شمالی ضلع کوچ بہار میں بھارت جوڑو نیائے یاترا کے بنگال کے پہلے مرحلے کو مکمل کیا تھا۔ اس دوران راستے میں ہزاروں لوگ ان کے استقبال کیلئے قطار میں کھڑے رہے اور انہیں حمایت دی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *