تحریک انصاف کا بانی پی ٹی آئی اور شاہ محمود کی سزا کا فیصلہ چیلنج کرنے کا اعلان

راولپنڈی : وکیل پی ٹی آئی بیرسٹرعلی ظفر نے بانی پی ٹی آئی کی سزا کا فیصلہ چیلنج کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ یہ ٹرائل اور فیصلہ نہیں ہے یہ صرف کاغذ کا ٹکڑا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وکیل پی ٹی آئی بیرسٹرعلی ظفر نے اے آر وائی نیوز سے خصوصی گفتگو میں سائفر کیس میں بانی پی ٹی آئی کو 10 سال قید کی سزا پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جتنی دستاویزات دیکھیں ظاہرہورہاتھایہ ٹرائل نہیں انصاف سےمذاق تھا، انصاف کے تقاضے پورے نہیں ہوئے بلکہ دھجیاں اڑائی گئیں۔

وکیل پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ کیس میں پچھلے 4، 5دن انصاف اور قانون کے تقاضوں کو رد کیا گیا،مس ٹرائل ہے،آرٹیکل 10اےکی خلاف ورزی ہے، یہ انصاف کے نظام کےساتھ ایک مذاق تھا،اوپن ٹرائل نہیں ہورہاتھا۔

بیرسٹرعلی ظفر نے کہا کہ سزاتب ہوتی جب جرم ثابت ہو یہاں تو ٹرائل ہی نہیں ہوا، سزا کم تب ہوتی ہے جب اعتراف ہوکہ جرم کیا ہے سزا کم کی جائے، آئین و قانون کاتقاضا ہے فیئر ٹرائل سے ہی سزا دی جاسکتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سرکاری وکلا کو ایک روز پہلے کیس فائل دی گئی، انہوں نے چھوٹی سی جرح کی،عدالتی آرڈر مل جائے سزا کیخلاف اپیل کل فائل ہوجائے گی۔

وکیل پی ٹی آئی نے مزید کہا کہ عدالت نے پراسیکیوشن سے وکیل لےکر اسٹیٹ کونسل وکیل تعینات کردیئے، کیس کا ٹرائل غیرقانونی ہوا ہے عدالت نے پروسیجر کو فالو نہیں کیا، سائفرکیس میں جو سزا سنائی گئی وہ ختم ہوجائےگی۔

بیرسٹرعلی ظفر کا کہنا تھا کہ یہ ٹرائل اور فیصلہ نہیں ہے یہ صرف کاغذ کا ٹکڑا ہے ، قانون کےتحت اسلام آبادہائیکورٹ میں فیصلے کو چیلنج کریں گے ، امید ہے سائفر کیس کا فیصلہ آج شام تک تحریری طور پر مل جائے گا ، آج تحریری فیصلہ مل جاتاہےتو کل تک اپیل دائر کردیں گے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *