News4

تلنگانہ میں من مانی فیصلے کرنے والی حکومت کا خاتمہ ‘ عوامی حکومت کا قیام

کانگریس کی دو حکومتوں پر عمل کا آغاز ۔ مزید دو ضمانتوں پر جلد عمل ۔ بی آر ایس نے حکومت کے اچھے کاموںکو قبول نہیںکیا ۔ اسمبلی میںچیف منسٹر کا خطاب

حیدرآباد /9 فروری ( سیاست نیوز ) چیف منسٹر اے ریونت ریڈی نے کہا کہ تلنگانہ میں ظلم و ستم اور من مانی فیصلے کرنے والی حکومت کا خاتمہ ہوگیا ہے ۔ عوامی حکومت قائم ہوئی ہے ۔ دو ماہ میںدو ضمانتوں پر عمل کیا گیا ۔ بہت جلد مزید 2 ضمانتوں پر عمل کیا جائے گا ۔ خواتین کو بس میں مفت سفر کی سہولت اور آروگیہ شری اسکیم کی طبی امداد کو 10 لاکھ روپئے تک اضافہ کے آج دو ماہ مکمل ہوئے ہیں۔ آج اسمبلی میں گورنر کے خطبہ اظہار تشکر پر مباحث ہوئے جس کے بعد اسپیکر نے گورنر خطبہ پر تحریک تشکر کی منظوری کا اعلان کیا اور اسمبلی اجلاس کو ہفتہ دوپہر 12 بجے تک ملتوی کردیا ۔ چیف منسٹر نے مباحث میں حصہ لیتے ہوئے کہا کہ قائد اپوزیشن گورنر کے خطبہ میں حاضر نہیں ہوئے کم از کم اظہار تشکر مباحث میں شرکت کی توقع تھی مگر وہ آج بھی حاضر نہیں ہوئے ۔ قائد اپوزیشن کی نشست خالی ہے جو دیکھنے میں اچھا نہیں لگ رہا ہے ۔ عوام نے بی آر ایس کو اقتدار سے بے دخل کرکے اپنا محاسبہ کرنے کا موقع دیا ہے ۔ اگر کے سی آر ایوان میں حکومت کو تجاویز پیش کرتے تو بہتر ہوتا ۔ کانگریس حکومت ماضی کی غلطیوں کو دور کرنے کی کوشش کر رہی ہے ۔ کئی اصلاحات لائے جارہے ہیں۔ عوام کی خوشحالی ریاست کی ترقی کیلئے کام کئے جارہے ہیں وہ امید کر رہے تھے کہ بی آر ایس پارٹی حکومت کی کارکردگی کی ستائش کریگی ۔ یا تجاویز اور مشورے دے گی ۔ بی آر ایس رکن اسمبلی پی راجیشور ریڈی سے توقع تھی کہ وہ تجاویز پیش کریں گے تاہم وہ بھی اپنے قائد کو خوش کرنے حکومت کو نشانہ بنارہے ہیں ۔ ہم نے تلنگانہ عوام کے جذبہ کا احترام کرکے گاڑیوں کے نمبر پلیٹ کو TS سے TG میں تبدیل کیا ہے۔ تلنگانہ کا ترانہ متعارف کرایا گیا ۔ ماں جیسی تلنگانہ تلی کا مجسمہ بنایا جارہا ہے ۔ حکومت کے ان اقدامات کی بی آر ایس نے تعریف نہیں کی ۔ ریاستی ایمبلم کو قربانیوں کی نشانیوں کے طور پر پیش کیا جارہا ہے ۔ 10 سال تک اقتدار میں رہنے والی بی آر ایس ‘کانگریس کی دو ماہی حکومت پر غیر ضروری تنقید کر رہی ہے ۔ ہم نے وعدے کے مطابق سرکاری ملازمین اور ریٹائرڈ ملازمین کو تنخواہیں ادا کردی ۔ اولڈ ایج پنشن 80 فیصد ادا کردیا ہے۔ مزید ایک ہفتہ میں مابقی پنشن جاری کردیا جائیگا ۔ ریتو بندھو اسکیم پر عمل میں ناکامی کا الزام عائد کیا جارہا ہے ۔ جبکہ بی آر ایس حکومت میں 5 تا 9 ماہ تک جاری کیا گیا ۔ آر ٹی سی بسوں میں خواتین کو مفت سفر کی سہولت پر بی آر ایس واویلا مچاری ہے ۔ تاحال 15 کروڑ سے زائد خواتین بسوں میں مفت سفر کرچکی ہیں ۔ ان پر حکومت نے 500 کروڑ روپئے خرچ کئے ۔ بی آر ایس ایک طرف آٹو ڈرائیورس کے مسائل کو پیش کر رہی ہے ۔ آٹو ڈرائیورس پریشان ہیں تو آٹو کو کیسے آگ لگاسکتے ہیں ۔ ہریش راؤ کو خودکشی کرنے 100 روپئے کا پٹرول مل سکتا ہے مگر خود کو آگ لگانے ایک روپیہ کی کاڑی کی ڈبی نہ ملنے کا دعوی کیا ۔ کانگریس حکومت 2 لاکھ ملازمتوں کی فراہمی میں سنجیدہ کوشش کر رہی ہے ۔ 6900 اسٹاف نرسیس کا تقرر کیا گیا گروپ I کا بہت جلد اعلامیہ جاری کیا جائیگا ۔ امیدواروں کی حد عمل کو 46 سال تک استثنی دیاجائیگا ۔ بہت جلد پولیس محکمہ میں 15 ہزار جائیدادوں پر تقررات کئے جائیںگے ۔ بی آر ایس کو پرجاوانی پروگرام کی معلومات فراہم کی جارہی ہے ۔ جہاں پر دھرانی پوٹل کے مسائل زیادہ پیش ہو رہے ہیں۔ وہ بحیثیت چیف منسٹر تمام جماعتوں کے قائدین بالخصوص کے سی آر سے ملاقات کرنے تیار ہیں ۔ اکبر اویسی کے علاوہ تمام جماعتوں کے ارکان اپنے حلقوں کے عوامی مسائل پر ان سے ملاقات کرسکتے ہیں۔ بی آر ایس کے چند ارکان مجھ سے ملاقات کرچکے ہیں جن پر پارٹی قیادت کو بھروسہ نہیں ہے ۔ ان پر دباؤ ڈال کر دوسرے دن وضاحت کیلئے مجبور کیا گیا ۔ کالیشورم پراجکٹ کی بدعنوانیوں پر پردہ ڈالنے کے آر ایم بی پراجکٹ کا مسئلہ اٹھایا جارہا ہے ۔ بی آر ایس حکومت نے کرشنا پراجکٹس کو مرکز کے حوالے کیا تھا ۔ چیف منسٹر نے کے سی آر کو مشورہ دیا کہ وہ اس مسئلہ پر مرکز پر دباؤ ڈالنے نلگنڈہ کے بجائے دہلی میں احتجاج کریں ۔ کے سی آر ، کے ٹی آر و ہریش راؤ جنتر منتر پر غیر معینہ مدت کی بھوک ہڑتال کریں۔ تلنگانہ حکومت احتجاج کی تائید کریگی ۔ بی آر ایس کی ہٹ دھرمی پر شیطان بھی ڈر رہا ہے ۔ وہ چیف منسٹر کا حلف لیتے ہی پرگتی بھون کی رکاوٹوں کو منہدم کرچکے ہیں اور سکریٹریٹ کے دروازے کھول دئے گئے ۔ وہ بحیثیت ایم پی اور پارٹی صدر ایک وزیر سے ملاقات کرنے جارہے تھے ۔ تاہم پولیس نے انہیں روک کر دہشت گردوں جیسا سلوک کیا ہے اور مجھے زبردستی میرے گھر چھوڑ دیا گیا ۔ 2

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *