News4

رام مندر کے افتتاح سے لوک سبھا الیکشن میں بی جے پی کو فائدہ نہیں ہوگا: ششی تھرور

نئی دہلی :کانگریس لیڈر ششی تھرور کا ماننا ہے کہ ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کا بی جے پی کے حق میں قلیل مدتی اثر پڑے گا اور آئندہ لوک سبھا انتخابات میں اس موضوع سے بی جے پی کو کوئی فائدہ نہیں ہوگا۔ وہ جے پور لٹریچر فیسٹول میں میڈیا سے بات کر رہے تھے۔کیرالا کے ترواننت پورم سے ممبر آف پارلیمنٹ ششی تھرور نے اس بات پر زور دیتے ہوئے کہا کہ لوگوں کو رام مندر کے بارے میں نہیں بلکہ اپنے معیار زندگی کے بارے میں سوچنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ لوگ اپنی معاشی حالت پر زور دیں۔ کیا اس حکومت میں وہ بہتر ہے؟ کیا وہ اپنی زندگی سے خوش ہیں؟ ذرا بنیادی اشیاء کی قیمتوں کو دیکھیں، کیا اس حکومت کے تحت کسی بھی پیرا میٹرز پر ان کی زندگی میں بہتری آئی ہے؟‘‘ ششی تھرور نے کہا کہ موجودہ حکومت نے نچلی سطح کے لوگوں کو با اختیار بنانے کیلئے بہت کم کام کیا ہے۔ غریب مزید غریب تر ہوتے جا رہے ہیں اور ان کے لیے کچھ نہیں کیا جا رہا ہے۔ کانگریس آزاد معیشت کیلئے پرعزم ہے تاکہ وہ اپنی زندگی میں کامیاب ہو سکیں۔ ای ڈی جیسی مرکزی ایجنسیوں کے چھاپوں اور گرفتاریوں کے بارے میں سوال پر تھرور نے کہا کہ کہ ایجنسیوں کو اپنا کام کرنا چاہیے لیکن یہ ضروری ہے کہ یہ غیر جانبداری سے کیا جائے۔ ایسا کیوں ہے کہ صرف اپوزیشن لیڈروں کو ہی گرفتار کیا جاتا ہے؟ یہ دیکھ کر افسوس ہوتا ہے کہ حکومت ان ایجنسیوں کو بے شرمی سے استعمال کر رہی ہے۔ ششی تھرور نے کہا کہ جو کوئی بھی مرکزی حکومت سے اختلاف کرتا ہے اسے ملک دشمن قرار دیا جاتا ہے۔تھرور نے کہا کہ افسوس کہ ایک دہائی سے صرف ایک ہی شخص کی بات ہو رہی ہے اور جمہوریت چیلنج کا سامنا کر رہی ہے۔
ششی تھرور نے مرکز پر ہندوستان کے جمہوری اداروں کو تباہ کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ ملک ایک انتخابی آمریت میں تبدیل ہو رہا ہے۔ ملک کو اب ایک الگ قیادت کی ضرورت ہے، جو عوام کی ضروریات کو سمجھنے اور ان کے مسائل کا حل تلاش کرنے کے لیے تیار ہو۔انہوں نے نوجوانوں پر زور دیا کہ وہ اپنے ووٹ کا احتیاط سے استعمال کریں کیونکہ ملک کا مستقبل ان کے ہاتھ میں ہے۔انڈیا اتحاد سے متعلق ششی تھرور نے کہا کہ ’’انڈیا اتحاد میں متعدد پارٹیاں شامل ہیں اور اختلاف ہونا لازمی ہے۔بی جے پی کو یاد رکھنا چاہیے کہ رام پر صرف اس کا حق نہیں ہے، میں جب چاہوں گا جاؤں گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *