News4

راہول کی یاترا کو لیکر کانگریس صدر کا ممتا کو مکتوب

یاترا کو کسی قسم کے خلل کے بغیر یقینی بنانے پر زور : گھرگے

کلکتہ: راہول گاندھی کی بھارت جوڑو نیائے یاترا بنگال پہنچ چکی ہے مگر آسام کی طرح بنگال میں بھی یاترا کو مشکل حالات کا سامنا ہے ۔ کانگریس صدر ملکاارجن کھرگے نے چیف منسٹرممتا بنرجی کو مکتوب لکھ کر اس معاملے میں مداخلت کرنے کی اپیل کی اور اس بات کو یقینی بنانے پر زور دیا کہ راہول گاندھی ریاست میں اپنا پروگرام محفوظ اور صحیح طریقے سے جاری رکھ سکیں۔راہول گاندھی کی یاترا گزشتہ جمعرات کی صبح کوچ بہار کی بکشیرہاٹ سرحد کے راستہ آسام سے بنگال میں داخل ہوچکی ہے ۔ فی الحال یہ یاترا جلپائی گوڑی میں ہے ۔ کوچ بہار پہنچنے کے فوراً بعد راہول گاندھی کو ضروری امور کی وجہ سے دہلی واپس جانا پڑا تھا ۔کانگریس ذرائع کے مطابق راہول گاندھی اتوار سے سلی گوڑی میں نیائے یاترا میں شامل ہوجائیں گے۔ لیکن پولیس کی اجازت نہیں ہونے کی وجہ سے نیائے یاترا جلپائی گوڑی کے پی ڈبلیو جنکشن سے سلی گوڑی کیسے پہنچے گی اس بارے میں غیر یقینی صورتحال ہے ۔ تنازعہ کے ماحول میں کھرگے نے چیف منسٹربنگال کو خط لکھ کریاترا میں رخنہ نہیں ڈالنے کی اپیل کی ہے ۔منی پور سے راہول گاندھی کی یاترا شروع ہونے کے بعد سے ہی مشکلات کا سامنا ہے ۔آسام میں بھی یاترا کو لے کر ہنگامہ ہوا۔ کانگریس نے بی جے پی پر رخنہ ڈالنے اور حملہ کرنے کا الزام عائد کیا ۔کھرگے نے ممتابنرجی کے نام لکھے خط میں ان تمام امور پر روشنی ڈالی ہے ۔انہوں نے خط میں کہا ہے کہ بنگال میں بھی یاترا کے دوران ہنگامہ اور رخنہ ڈالنے کا امکان ہے ۔انہوں نے لکھا ہے کہ خبر ملی ہے کہ کچھ شر پسند عناصر ہمارے یاترا کے دوران ہنگامہ کرنے کا منصوبہ بنارہے ہیں ۔ مجھے نہیں معلوم کہ اس کے پیچھے ریاستی انتظامیہ کا کردار کیا ہے ۔اس لئے میں نے آپ کو ذاتی طور پر خط لکھا ہے ۔
قومی سطح پر بی جے پی مخالف اتحاد‘‘انڈیا’’ میں شامل ہونے کے باوجودبنگال میں سیٹوں کی تقسیم کو لے کر دونوں پارٹیوں کے درمیان سمجھوتہ نہیں ہوسکا ہے ۔ممتا بنرجی نے کانگریس کے ساتھ سیٹوں کی تقسیم کرنے سے انکار کردیا ہے ۔اس کے بعد دونوں پارٹیوں کے درمیان تعلقات کشیدہ ہوگئے ہیں ۔وزیر اعلیٰ نے واضح کر دیا ہے کہ بنگال میں کوئی اتحاد نہیں ہے ۔ تاہم کانگریس ذرائع کا دعویٰ ہے کہ وہ بنگال کی حکمران جماعت کے ساتھ بات چیت جاری رکھے ہوئے ہیں۔ قومی سیاست کے تناظر میں راہل گاندھی اتحاد کرنے کے حق میں ہیں ۔ان حالات میں کانگریس کے صدر کا یہ خط کافی اہم سمجھا جارہا ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *