غزہ: اسکول سے ہاتھ پاؤں بندھی 30 سے زائد لاشیں برآمد، ویڈیو سامنے آگئی

اسرائیلی فوج کی جانب سے غزہ میں بدترین مظالم کا سلسلہ جاری ہے، شمالی غزہ کے اسکول سے ہاتھ پاؤں بندھی 30 سے زائد لاشیں برآمد کرلی گئی ہیں۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق فلسطینی وزارت خارجہ نے فلسطینیوں کے قتل عام کی عالمی تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔

وزارت خارجہ کے مطابق شمالی غزہ کے اسکول سے 30 سے زیادہ لاشیں اجتماعی قبر سے برآمد کی گئی ہیں، لاشوں کی آنکھوں پر پٹیاں، ہاتھ پیر بندھے ہوئے تھے، ان تمام فلسطینیوں کو تشدد کرکے قتل کیا گیا تھا۔

30 bodies left in plastic body bags were discovered in the Khalifa bin Zayed school in Beit Lahia in the northern #Gaza Strip following the Israeli army withdrawal.

Their hands were tied behind their backs, their eyes covered with cloth, and their bodies concealed in zip-up… pic.twitter.com/Wr05NQRTnX

— The Palestine Chronicle (@PalestineChron) January 31, 2024

فلسطینی وزارت خارجہ کے مطابق اسرائیل غزہ میں بین الاقوامی قوانین کی سنگین خلاف ورزیاں کر رہا ہے، یہ تمام شواہد ثابت کرتے ہیں اسرائیل فلسطینیوں کا قتل عام کر رہا ہے۔

دوسری جانب غزہ میں اسرائیلی فوج کی جانب سے رہائشی علاقوں میں بربریت کا سلسلہ جاری ہے، قابض فوج کی جانب سے الامل اسپتال پر فائرنگ اور گولہ باری سے ایک خاتون سمیت متعدد فلسطینی جام شہادت نوش کرگئے۔

اسرائیلی حملوں میں گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران شہید ہونے والے فلسطینیوں کی تعداد 114تک پہنچ گئی۔

غزہ میں اسرائیلی بربریت کا سلسلہ جاری، مزید 114 فلسطینی شہید

صیہونی افواج نے اسپتال میں زخمیوں پر بھی رحم نہ کھایا اور طبی عملے کے بھیس میں اسپتال میں گھس کر فائرنگ کر کے 3 فلسطینی نوجوانوں کو شہید کر دیا۔ اسرائیل سے ملنے والی 100 نامعلوم فلسطینیوں کی لاشوں کی اجتماعی قبروں میں تدفین کردی گئی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *