News4

مودی حکومت منظم انداز میں جمہوری اداروں کو کمزور کر رہی ہے

تحقیقاتی ایجنسیوںکاغلط استعمال‘صدر کانگریس ملکارجن کھرگے کا الزام
نئی دہلی :کانگریس کے صدر ملک ارجن کھرگے نے بے روزگاری، مہنگائی، تحقیقاتی ایجنسیوں کے غلط استعمال اور بڑھتی ہوئی معاشی عدم مساوات کے حوالہ سے مودی حکومت پر سخت حملہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ منظم طریقے سے جمہوری اداروں کو کمزور کر رہی ہے۔کل کیرالہ میں عوامی ریالی سے خطاب کرتے ہوئے کھرگے نے کہا کہ آج مہنگائی اور بے روزگاری اپنے عروج پر ہے اور مہنگائی نے غریب اور متوسط طبقے کو برباد کر دیا ہے۔ آج 20 سے 24 سال کی عمر کا ہر دوسرا نوجوان بے روزگار گھوم رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ مودی حکومت میں بڑے کارپوریٹس پر ٹیکس کم ہوا ہے اور ضروری اشیاء پر جی ایس ٹی بڑھ گیا ہے۔ بڑے صنعت کاروں کے لاکھوں کروڑوں کے قرضے معاف کر دیے گئے، چھوٹی صنعتوں اور کسانوں کو ایک ایک پیسہ ادا کرنے میں مشکلات کا سامنا ہے۔ کانگریس کا وژن روزگار پیدا کرکے، سرمایہ کاری کو راغب کرکے اور کیرالا کی معیشت کو بحال کرکے پائیدار ترقی کو فروغ دے کر جامع ترقی کو یقینی بنانا ہے۔ بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت پبلک سیکٹر کو مکمل طور پر تباہ کر کے اسے مودی جی کے قریبی دوستوں کے حوالے کرنا چاہتی ہے۔’بھارت جوڑو نیائے یاترا’ کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ راہول گاندھی کیرالا کی نمائندگی کرتے ہیں اور کنیا کماری سے کشمیر تک کامیاب ’بھارت جوڑو یاترا‘ مکمل کرنے کے بعد اب وہ منی پور سے ممبئی تک ’بھارت جوڑو نیائے یاترا‘ کر رہے ہیں۔ یہ یاترا ایک ایسے ہندوستان کی علامت ہے جہاں ہر شخص کو یکساں مواقع اور انصاف ملتا ہے۔کانگریس کے صدر نے کہا کہ مودی حکومت صرف ریاستی حکومتوں کو ہراساں کر رہی ہے اور غریبوں اور خواتین کو کچل رہی ہے۔ کانگریس کیرالا سمیت تمام ریاستوں کیلئے انصاف کو یقینی بنانے کی پابند عہد ہے۔ آج تمام جمہوری اداروں کو منظم طریقے سے کمزور کیا جا رہا ہے۔ ای ڈی، سی بی آئی، انکم ٹیکس جیسی ایجنسیاں اپوزیشن لیڈروں کو نشانہ بنانے کیلئے ہتھیار بنی ہوئی ہیں۔ لوگوں کو مختلف اعلیٰ عہدوں پر میرٹ کی بنیاد پر نہیں بلکہ راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) اور بی جے پی سے قربت کی بنیاد پر تعینات کیا جا رہا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *