News4

پانچ غیر بی جے پی ریاستوں سے زیادہ اترپردیش کو مرکزی فنڈس

مرکزی ٹیکسس میں ناانصافی، اترپردیش کو ایک روپیہ کے مقابلہ دو روپیہ کی اجرائی
حیدرآباد ۔ 9 ۔ فروری (سیاست نیوز) مرکزی حکومت کی جانب سے غیر بی جے پی ریاستوں کے ساتھ ناانصافی پر عوام میں شدید ناراضگی پائی جاتی ہے ۔ ریاستوں کی جانب سے مرکز کو جی ایس ٹی اور دیگر ٹیکسس کے تحت جو رقومات دی جاتی ہیں، اس کے عوض میں مرکز ریاستوں کو فنڈس جاری کرتا ہے ۔ مالیاتی سال 2018-23 کے دوران مرکز نے پانچ ریاستوں کو جو فنڈس جاری کئے ، وہ اترپردیش کو جاری کردہ فنڈس سے کم ہے۔ تلنگانہ ، آندھراپردیش ، ٹاملناڈو ، کرناٹک اور کیرالا نے مرکز کو ٹیکسوں کے تحت 2266983.39 کروڑ ادا کئے لیکن پانچ برسوں میں پانچ ریاستوں کو مرکز نے 642295.05 کروڑ جاری کئے۔ ایک روپیہ کی ادائیگی پر ریاستوں کا حصہ تعین کریں تو تلنگانہ کو 40 پیسے ، آندھراپردیش کو 50 پیسے ، ٹاملناڈو 26 پیسے ، کیرالا 60 پیسے اور کرناٹک کو 16 پیسے ادا کئے گئے ۔ برخلاف اس کے اترپردیش کو ایک روپئے کے بدلہ 2 روپئے 2 پیسے ادا کئے گئے۔ اترپردیش کی جانب سے ٹیکسس کے طورپر 341817.60 کوڑ ادا کئے تھے جبکہ مرکزی حکومت نے پانچ برسوں میں 691375.12 کروڑ جاری کئے۔ پانچ ریاستوں کے مجموعی فنڈ سے زیادہ صرف ایک ریاست اترپردیش کو فنڈس کی اجرائی عمل میں لائی گئی ۔ نریندر مودی حکومت کا غیر بی جے پی ریاستوں کے ساتھ ناانصافی کا رویہ آشکار ہوچکا ہے ۔ اترپردیش چونکہ بی جے پی زیر اقتدار ہے اور وہاں سے بی جے پی ارکان پارلیمنٹ کی تعداد بھی زیادہ ہے ، لہذا مودی حکومت نے کچھ زیادہ ہی مہربانی دکھائی ہے۔ 1

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *