News4

کونسل میں بی آر ایس ارکان کی چیف منسٹر کے خلاف نعرہ بازی ‘کارروائی میں خلل

ایوان کے وسط میں احتجاج، کارروائی دو مرتبہ ملتوی، چیف منسٹر سے معذرت خواہی کا مطالبہ
حیدرآباد ۔ 9 ۔ فروری(سیاست نیوز) تلنگانہ قانون ساز کونسل میں بی آر ایس ارکان نے احتجاج کے ذریعہ ایوان کی کارروائی میں رکاوٹ پیدا کردی ۔ چیف منسٹر ریونت ریڈی سے ارکان کونسل کے خلاف مبینہ ریمارک پر معذرت کے مطالبہ پر بی آر ایس ارکان نے صدرنشین سکھیندر ریڈی کے پوڈیم کے اطراف احتجاج کیا اور چیف منسٹر کے خلاف نعرہ لگائے۔ ریونت ریڈی نے اپنے ایک ٹی وی انٹرویو میں کونسل ارکان سے متعلق ریمارکس کئے تھے۔ بجٹ اجلاس کے آج پہلے دن بی آر ایس کے ارکان سیاہ اسکارف کے ساتھ ایوان میں داخل ہونے کی کوشش کی جس پر پولیس اور مارشلس نے روک دیا ۔ باب الداخلہ پر بی آر ایس ارکان اور پولیس کے درمیان بحث و تکرار ہوئی ۔ پولیس نے سیاہ اسکارف کے ساتھ داخلہ پر اعتراض جتایا۔ کافی و بحث و تکرار کے بعد بی آر ایس ارکان ایوان میں داخل ہوئے اور اجلاس کی کارروائی کے آغاز کے ساتھ ہی نعرہ بازی شروع کردی۔ صدرنشین کے پوڈیم کے اطراف جمع ہوکر ارکان نے چیف منسٹر کے خلاف نعرہ لگائے ۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ ریونت ریڈی ایوان میں پہنچ کر غیر مشروط معذرت خواہی کریں۔ بی آر ایس رکن بھانو پرکاش نے الزام عائد کیا کہ چیف منسٹر نے کونسل ارکان کی توہین کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ایوان کے وقار کو ملحوظ رکھنا چیف منسٹر کی ذمہ داری ہے۔ بی آر ایس ارکان کے احتجاج سے ایوان کی کارروائی متاثر رہی اور صدرنشین نے ایوان کو 10 منٹ کیلئے ملتوی کردیا۔ سکھیندر ریڈی نے بتایا کہ چیف منسٹر کے خلاف شکایت کو سکریٹری لیجسلیچر سے رجوع کیا گیا ۔ ایوان میں نظم بحال کرنے صدرنشین سکھیندر ریڈی نے ریاستی وزیر جوپلی کرشنا راؤ اور بی آر ایس ارکان کے ساتھ اجلاس منعقد کیا۔ بی آر ایس ارکان چیف منسٹر کو طلب کرنے کا مطالبہ کر رہے تھے۔ ارکان نے کہا کہ اس بارے میں وزیر امور مقننہ کو وضاحت کرنی چاہئے ۔ صدرنشین اور وزراء کے درمیان مذاکرات سے کوئی نتیجہ برآمد نہیں ہوا اور ایوان کی کارروائی کو دوسری مرتبہ ملتوی کرنا پڑا ۔ بی آر ایس کونسل کا اجلاس منعقد ہوا اور چیف منسٹر کی معذرت خواہی تک احتجاج جاری رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ۔ ارکان نے کونسل کے احاطہ میں چیف منسٹر کے خلاف مظاہرہ کیا۔ ریاستی وزیر کرشنا راؤ نے ایوان کو یقین دلایا کہ چیف منسٹر شام میں کونسل میں اپنے بیان کی وضاحت کریں گے۔ رکن کونسل کویتا احتجاج کی قیادت کر رہی ہیں۔ واضح رہے کہ چیف منسٹر نے تلگو چیانل کو انٹرویو میں کونسل ارکان کو رئیل اسٹیٹ تاجرین قرار دیا تھا۔ 1

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *