News4

کے سی آر حکومت پر تنقید کیلئے کالوجی نارائن راؤ کے اشعار کا استعمال

تنقید کا ہر موقع گورنر نے استعمال کیا، اقتدار کے بیجا استعمال کا تذکرہ
حیدرآباد ۔ 8 ۔ فروری(سیاست نیوز) تلنگانہ میں حکومت کی تبدیلی کے بعد گورنر ڈاکٹر ٹی سوندرا راجن سابق کے سی آر حکومت پر تنقید کا کوئی موقع ہاتھ سے جانے نہیں دیتیں۔ کانگریس حکومت کی تشکیل کے بعد جب کبھی گورنر نے خطاب کیا، سابق حکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا۔ اسمبلی اور کونسل کے بجٹ اجلاس کے پہلے دن بھی گورنر نے اپنے خطبہ کے آغاز پر مشہور تلگو شاعر کالوجی نارائن راؤ کے اشعار کے ذریعہ بی آر ایس حکومت پر تنقید کی۔ خطبہ کے آغاز پر ہی گورنر نے کالوجی نارائن راؤ کے اشعار پڑھے جو بالواسطہ طور پر کے سی آر حکومت پر تنقید تھی ۔ خطبہ کے پہلے صفحہ پر اشعار کے ذریعہ سابق حکومت کو تنقید کا نشانہ بنانا سیاسی حلقوں میں موضوع بحث بن چکا ہے ۔ گورنر نے جو اشعار پڑھے، ان کا ترجمہ کچھ یوں ہے کہ ’’آپ نے اقتدار رکھتے ہوئے غیر قانونی طریقوں سے اندھا دھند فائدہ اٹھانے کی کوشش کی، لیکن اب وہ دن گزر گئے، وہ دن گزر گئے‘‘۔ ٹامل شاعر سبرامنیا بھارتی کا جو شعر گورنر نے پڑھا ، اس کا مفہوم یہ ہے کہ ’’دولت کیلئے عقل کی روشنی چاہئے ‘‘ ۔ ریاست کے مالی موقف کو بہتر بنانے کا حوالہ دیتے ہوئے گورنر نے ٹامل زبان کا شعر پڑھا۔ 1

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *