News4

گیانواپی مسجد معاملہ پر مولانا توقیر رضا کا جیل بھرو احتجاج

بریلی میں سینکڑوں مسلمانوں نے خود کو گرفتاری کیلئے پیش کیا، علاقہ میں کشیدگی

بریلی: معروف سنی عالم دین مولانا توقیر رضا خان نے آج اترپردیش کے بریلی میں اپنے سینکڑوں حامیوں کے ساتھ گیانواپی مسجد معاملہ میں زبردست احتجاج کرتے ہوئے خود کو گرفتاری کیلئے پیش کردیا۔ گذشتہ روز انہوں نے مسلمانوں سے گیانواپی مسجد کے معاملے پر بریلی میں جیل بھرو احتجاج کرنے کی اپیل کی تھی۔ اتحاد ملت کونسل کے سربراہ توقیر رضا خان کے سینکڑوں حامیوںنے آج بریلی کی سڑکوں پر جیل بھرو احتجاج کیا جس کے بعد علاقہ میں کشیدگی دیکھی گئی۔ وہیں پولیس کے مطابق شاہمت گنج محلہ میں مبینہ طور پر پتھراؤ کا واقعہ پیش آیا جس کے نتیجہ میں ایک شخص زخمی ہوا۔ ضلع مجسٹریٹ نے اس سلسلہ میں ایف آئی آر درج کرنے کی ہدایت دی ہے۔ قبل ازیں مولانا توقیر رضا نے گیانواپی مسجد معاملہ پر جیل بھرو احتجاج کرنے کی کال دیتے ہوئے مسلمانوں سے رضاکاارانہ طور پر گرفتاری دینے کی اپیل کی تھی۔ مولانا توقیر رضا کی کال کے بعد آج صبح سے ہی بریلی میں سیکیوریٹی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے۔ مولانا توقیر رضا خان نے جمعہ کی سہ پہر خود کو گرفتاری کیلئے پیش کرکے گیانواپی معاملہ میں اپنے شدید احتجاج کا اظہار کیا۔ مولانا توقیر رضا دوپہر دیڑھ بجے قیامگاہ سے مسجد اعلیٰ اسلامیہ میدان پہنچے۔ انہوں نے یہاں جمعہ کی نماز ادا کی اور بطور احتجاج اپنی گرفتاری دے دی۔ مولانا کو بعدازاں رہا کردیا گیا۔ مولانا کے ساتھ سینکڑوں مسلمانوں نے احتجاج کیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *