News4

ہریانہ میں کسانوں کا احتجاج جاری8 فروری کو دہلی کوچ کی تیاری

حصار: ہریانہ کے حصار میں منی سکریٹریٹ کے سامنے سنیوکت کسان مورچہ کے ذریعے جاری غیر معینہ ہڑتال آج 28 جنوری کو 26ویں دن میں داخل ہو گئی۔ ان 26 دنوں سے کسان جائے احتجاج پر جمے ہوئے ہیں۔ کسانوں نے حکومت کو 7 فروری تک کا الٹی میٹم دیا ہے کہ اگر اس وقت تک ان کے مطالبات تسلیم نہ کیے گئے تو 8 فروری سے وہ راج گڑھ ہائی وے کو غیر معینہ مدت کے لیے جام کر دیں گے اور اس سے پیدا ہونے والی صورت حال کی تمام تر ذمہ داری حکومت پر عائد ہوگی۔اس احتجاج کی صدارت سنیوکت کسان مورچہ کے ضلعی سربراہ شمشیر سنگھ نمبردار کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 26 جنوری کو سنیوکت کسان مورچہ کی کال پر حصار میں ایک زبردست ٹریکٹر ریلی نکالی گئی، جس میں ہزاروں کسانوں نے اپنے ٹریکٹر اور دیگر سامان کے ساتھ شرکت کی، جس کے لیے ہم کسانوں کے شکر گزار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر حکومت اور انتظامیہ نے 7 فروری تک ان کے مطالبات تسلیم نہ کیے تو 8 فروری کو حصار راج گڑھ روڈ ہائی وے پر غیر معینہ مدت کے لیے مستقل ہڑتال کی جائے گی۔اس احتجاج کے دوران بھارتیہ کسان یونین کے ریاستی صدر رتن مان اور دیگر کسانوں نے حکومت پر وعدہ خلافی کا الزام لگایا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *